یمن: حوثی باغیوں اور سرکاری فوج کے درمیان جھڑپیں، درجنوں باغی ہلاک

صنعا(دیس پردیس نیوز) یمن میں حوثی باغیوں اور سرکاری فوج کے درمیان جھڑپوں کے نتیجے میں اہم کمانڈر سمیت درجنوں باغی ہلاک ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق یمنی صوبے صعدہ میں یمنی فوج اور حوثی باغیوں کے درمیان جھڑپیں ہوئیں جس کے باعث اہم کمانڈر سمیت درجنوں حوثی باغی ہلاک ہوئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یمنی فوج نے یمن کے دیگر علاقوں میں بھی کارروائیاں کیں جس کے نتیجے میں متعدد حوثی باغی گرفتار بھی ہوئی ہیں۔

دوسری جانب سعودی اتحادی افواج کی جانب سے یمنی بندرگاہی شہر الحدیدہ میں کیے جانے والے حملوں کے باعث عام شہریوں کی ہلاکتوں میں بھی اضافہ ہوا ہے۔

یاد رہے کہ گذشتہ ہفتے یمن میں سرکاری فورسز اور حوثی باغیوں کے درمیان جھڑپوں کے نتیجے میں 73 باغی جبکہ 11 فوجی اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔

خیال رہے کہ الحدیدہ بندرگاہ پر سعودی عسکری اتحاد کی جانب سے حوثی کے لیے انخلا کے لیے ایک بڑا فوجی آپریشن کیا گیا تھا جس میں یمنی فوجیوں نے بھی حصہ لیا تھا۔

البتہ اب تک باغیوں کا انخلا عمل میں نہیں آیا، جبکہ عسکری اتحاد کے ترجمان کی جانب سے دعویٰ بھی سامنے آیا تھا کہ وہ جلد الحدیدہ کو باغیوں سے کلیئر کرالیں گے۔

اس آپریشن کے ردعمل میں حوثی باغیوں نے بھی بھرپور مزاحمت جاری رکھی، علاوہ ازیں باغیوں نے سعودی شہر جازان پر اپنے میزائل حملے تیز کردیے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں