شلپا شیٹھی کو سڈنی ایئرپورٹ پر نسل پرستی کا سامنا

ممبئی(دیس پردیس نیوز) بالی ووڈ کی نامور اداکارہ شلپا شیٹھی کو سڈنی کے ایئرپورٹ پر نسل پرستی کا سامنا کرنا پڑگیا۔

شلپا شیٹھی نے انسٹا گرام پر تصویر پوسٹ کی اور اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے سے متعلق بتایا کہ ’وہ سڈنی سے کنٹاس ایئرویز کے ذریعے ملبرن جارہی تھیں اُس دوران انہیں تعصب کا سامنا کرنا پڑا، ایئرپورٹ پر جب وہ اپنا بیگ چیک کرانے کاؤنٹر پر گئیں تو وہاں موجود بد مزاج خاتون نے اُن کے ساتھ جارحانہ اور غیر ضروری رویہ اپنایا۔

شلپا نے بتایا کہ اس خاتون نے اپنے منفی رویے کی وجہ سے میرا بیگ چیک کرنے سے انکار کردیا اور بڑے بیگ والے کاؤنٹر پر جانے کا کہا جب کہ میرا بیگ حقیقت میں آدھا خالی تھا اور ہمیں جس کاؤنٹر پر جانے کا کہا وہ کاؤنٹر 5 منٹ میں بند ہونے والا تھا تاہم ہم بغیر کوئی وقت ضائع کیے دوسرے کاؤنٹر پر پہنچ گئے اور وہاں موجود اسٹاف سے بیگ جلد چیک کرنے کی درخواست کی اور انہیں اُن کے اسٹاف کے رویئے سے بھی آگاہ کیا۔

View this post on Instagram

Subject: #Qantas airways @qantas This should get your attention! Travelling from Sydney to Melbourne and at the check in counter met a grumpy #Mel ( that’s her name)who decided it was “OK” to speak curtly to “US” ( Brown people!!) travelling together ,I was flying business and had 2 bags (my allowance)and she insisted and decided my half empty Duffel bag was oversized( to check in!!) So she sent us to check it in at the other counter dealing with “Oversized luggage” ..there a Polite lady(yes this one was) said ..”this ISN’T an oversized bag, pls check this in manually if u can at another counter” ( all this happening while the counter is going to shut in 5 mins) As the manual check in wasn’t going thru for 5 mins( we tried) I went upto #Mel and requested her to put the bag thru as her colleague said it wasn’t an oversized bag.. She refused again.. Just being adamant especially when I told her this is causing a lot of inconvenience .. We had no time to waste so we ran to the oversized baggage counter and requested her to put the bag through which she did after I told her that #Rude #Mel had issues !!!…. to which another colleague joined in an reiterated my duffle wasn’t oversized and could’ve easily been checked in. The point is .. This piece is only for #quantas airlines to know and take cognisance .. that their staff must be taught to be helpful and TONE can’t change with preference to #COLOUR .”WE” are NOT #pushovers and they MUST know that being #callous and #Rude will NOT BE TOLERATED 🙏✋🏼💔. Ps: Please tell me if that bag in the picture is oversized??!! @australia @visitmelbourne @travel #truthmustbetold #bemused #uncalledfor #standup #equality #whatswrongisnotright #instapic #travelwoes #shocking #nightmare #notcool

A post shared by Shilpa Shetty Kundra (@theshilpashetty) on

اداکارہ نے کہا کہ میرے ساتھ موجود ایک ساتھی نے بھی اس اسٹاف کو بتایا کہ شلپا کا بیگ آدھا خالی ہے پھر کیوں انہیں بھاری بھرکم والے بیگ کاؤنٹر پر بھیجا گیا؟ جب کہ ساتھ ہی شلپا نے پوسٹ کی گئی تصویر پر مداحوں سے پوچھا کہ کیا میرا بیگ حد سے بڑا ہے۔

شلپا شیٹھی نے کہا کہ ’میں ایئرپورٹ انتظامیہ سے درخواست کرنا چاہوں گی کہ وہ اپنے اسٹاف کو سکھائیں کہ لوگوں کے لیے مددگار ثابت ہوں ناکہ نسل اور رنگ کی بنیاد پر تعصب کا اظہار کریں‘۔

اپنا تبصرہ بھیجیں